لاگ ان / رجسٹر
جمعہ 19 شوال 1443 بہ مطابق 20 مئی 2022
لاگ ان / رجسٹر
جمعہ 19 شوال 1443 بہ مطابق 20 مئی 2022
لاگ ان / رجسٹر
جمعہ 19 شوال 1443 بہ مطابق 20 مئی 2022
جمعہ 19 شوال 1443 بہ مطابق 20 مئی 2022

سوال:ایک بہن کے شوہر کا انتقال ہو چکا ہے، ان کو اپنے شوہر کے اکاؤنٹ سے کچھ پرائز بانڈز اور شیئرز ملے ہیں، کچھ پرائز بانڈز پر انعام بھی نکلا ہے، جو ان کے شوہر نے نہیں لیا تھا، اب ان کی بیوی کا خیال ہے کہ یہ انعامی پیسہ لے کر کسی غریب کی مدد کر دی جائے اور گورنمنٹ کو پیسہ نہ جائے۔ کیا ان کا ایسا کرنا جائز ہوگا؟ کیا ان کے شوہر کی ملکیت ہونے کی وجہ سے ان کے لئے باعث عذاب تو نہ ہوگا اور شیئرز کے بارے میں بھی بتائیں کہ وہ اس کا کیا کریں؟ کیا شیئرز کا کاروبار جائز ہے۔جزاک اللہ خیراً

الجواب باسم ملهم الصواب

شیئرز کے کاروبار کے جائز ہونے کے لیے مندرجہ ذیل شرائط کا لحاظ ضروری ہے ۔

1۔جس کمپنی کے شیئرز کی خرید و فروخت کا ارادہ ہو اس کمپنی کا کاروبار حلال ہو۔

۲۔اس کمپنی کے کل اثاثے سیال(Liquid Assets)نہ ہوں بلکہ کچھ منجمد اثاثے(Fixed Assets)وجود میں آچکے ہوں۔

۳۔کمپنی کا کل کاروبار تو حلال ہو لیکن قانونی مجبوریوں کے پیش نظر وہ کمپنی کچھ سودی لین دین کرتی ہو تو سالانہ اجلاس عام(AGM) میں اس سودی لین دین کے خلاف آواز اٹھائی جائے اور اس پر عدم رضا مندی کا اظہار کیا جائے۔

۴۔جب منافع تقسیم ہوں تو آمدن کے گوشوارے کے ذریعے سودی لین دین سے حاصل ہونے والے حصہ کو معلوم کرکے اپنے منافع میں سے اتنا فیصد حصہ بغیر ثواب کی نیت سے صدقہ کردیا جائے۔

اگرمذکورہ خاتون کے شوہر نے مندرجہ بالا شرائط کے ساتھ شیئرز خریدے تھے تو ان کا استعمال خاتون کے لئے جائز ہے جس کی صورت یہ ہے کہ ان شیئرز کو مارکیٹ میں فروخت کر کے حاصل شدہ رقم کو شوہر کے تمام ورثاء کے درمیان تقسیم کرے۔

پرائز بانڈ کی خرید وفروخت سود اور قمار پر مشتمل ہونے کی وجہ سے جائز نہیں ۔ لہذا اگر کسی نے لاعلمی میں خرید لیا تو اس کی اصل رقم حلال ہے اور انعام کے نام پر ملنے والی رقم سود ہونے کی وجہ سے حرام ہے اور اس کا صدقہ کرنا واجب ہے۔ اس وضاحت کے بعد صورت مسئولہ کا حکم یہ ہے کہ پرائز بانڈ اور اس پر ملنے والی انعامی رقم دونوں بینک سے وصول کرلی جائیں، اس کے بعد اصل رقم ترکے میں شامل کرکے شرعی ورثاء میں تقسیم کی جائے اور انعامی رقم بلانیت ثواب غرباء میں تقسیم کی جائے۔

والله أعلم بالصواب

فتویٰ نمبر4674 :

لرننگ پورٹل