لاگ ان / رجسٹر
پیر 15 شوال 1443 بہ مطابق 16 مئی 2022
لاگ ان / رجسٹر
پیر 15 شوال 1443 بہ مطابق 16 مئی 2022
لاگ ان / رجسٹر
پیر 15 شوال 1443 بہ مطابق 16 مئی 2022
پیر 15 شوال 1443 بہ مطابق 16 مئی 2022

 اگر دو بھائی اور دو بہنیں ہوں، ایک بھائی اور ایک بہن غیر شادی شدہ ہو اورایک بھائی بہن شادی شدہ ہوں۔ غیر شادی شدہ بھائی کا انتقال ہوگیا تو اس بھائی کی وراثت کس کو ملے گی؟ برائے مہربانی صحیح رہنمائی فرمائیں۔

الجواب باسم ملهم الصواب

صورت مسئولہ میں اگر واقعۃ مرحوم کے اتنے ہی ورثاء ہیں جو سوال میں ذکر کئے گئے ہیں تو وہی ورثاء یعنی ایک بھائی اور دو بہنیں مرحو م کی میراث کے حقدار ہوں گے۔ بوقت انتقال مرحوم کی ملکیت میں منقولہ وغیر منقولہ جائیداد، نقدی سونا چاندی اور چھوٹا بڑا جو بھی سامان تھا، حتی کہ سوئی دھاگہ سب مرحوم کا ترکہ ہے۔میراث کی تقسیم کا طریقہ یہ ہے کہ سب سے پہلے مرحوم کے تجہیز و تکفین کا خرچہ نکالنے کے بعد اگر مرحوم کے ذمہ کوئی قرض ہو تو اس کو ادا کرنے کے بعد اگر مرحوم نے کوئی جائز وصیت کی تو اس کو ایک تہائی مال میں نافذ کرنے کے بعد کل مال کو مساوی چار حصوں میں تقسیم کر کے مرحوم کے بھائی کو دو حصے اور مرحوم کی ہر ایک بہن کو ایک ایک حصہ ملے گا۔ یعنی سو روپے میں سے بھائی کو پچاس روپے اور ہر ایک بہن کوپچیس پچیس روپے ملیں گے۔

ورثاء 

بھائی 

 بہن

 بہن

 حصص

  ۲

  ۱

  ۱

 فیصد

 ۵۰

 ۲۵

 ۲۵

والله أعلم بالصواب

فتویٰ نمبر4372 :

لرننگ پورٹل