لاگ ان / رجسٹر
جمعہ 19 شوال 1443 بہ مطابق 20 مئی 2022
لاگ ان / رجسٹر
جمعہ 19 شوال 1443 بہ مطابق 20 مئی 2022
لاگ ان / رجسٹر
جمعہ 19 شوال 1443 بہ مطابق 20 مئی 2022
جمعہ 19 شوال 1443 بہ مطابق 20 مئی 2022

فردوس الاخبار کے حوالے سے ایک حدیث پڑھی کہ فرمان مصطفی ﷺ ہے کہ ’’جس نے ابوبکر صدیق رضی اللہ عنہ کو خواب میں دیکھا اس نے واقعی انہیں کو دیکھا، کیونکہ شیطان ان کی شکل اختیار نہیں کرسکتا‘‘۔ برائے مہربانی اس کی تحقیق فرمادیں۔

الجواب باسم ملهم الصواب

واضح ہو کہ بکثرت صحیح احادیث سے یہ بات ثابت ہے کہ اگر کسی شخص کو خواب میں رسول اللہ ﷺ کی زیارت نصیب ہوئی تو اس نے حقیقتاً رسول اللہ ﷺ ہی کو دیکھا ہے، کیونکہ شیطان کو رسول اللہ ﷺ کی صورت وشکل میں ظاہر ہونے کی اللہ تعالی نے اجازت نہیں دی۔ یہ رسول اللہ ﷺ کی خصوصیت اور آپ کی خاص فضیلت ہے۔ امت کے افراد صحابہ کرام، خلفاء راشدین میں سے کسی کی یہ خصوصیت کسی صحیح روایت سے ثابت نہیں۔ 

مذکورہ بالا وضاحت کے بعد سوال میں جس روایت کا حوالہ دیا گیا ہے یہ روایت کنزالعمال ، جامع الاحادیث میں فردوس دیلمی اور تاریخ خطیب کے حوالے سے موجود ہے، لیکن اس روایت کا پہلا حصہ جس میں رسول اللہ ﷺ کو خواب میں دیکھنے کا ذکر ہے وہ صحیح ہے، دیگر صحیح روایات کے موافق ہے  اور جس حصہ میں حضرت ابو بکر رضی اللہ عنہ کو خواب میں دیکھنے کا ذکر ہے وہ حصہ سند کے اعتبار سے منکر ہے، کیونکہ اس روایت میں ایک راوی محمد بن اسحاق بن مہران المقرئ ہیں جن کے بارے میں خطیب بغدادی رحمہ اللہ نے فرمایا کہ ان کی بہت سی روایات منکر ہیں۔ لہذا اس حصے کو بیان کرنے سے احتیاط کرنا چاہیے۔ 

ففي اسناده محمد بن اسحاق بن مهران المقرئ ابوبكر يعرف بشاموخ قال الخطيب فی ترجمته حديثه كثير المناكير. (زوائد تاريخ بغداد علی الكتب السته ،ص: 390 ،دارالقلم دمشق)

والله أعلم بالصواب

فتویٰ نمبر4427 :

لرننگ پورٹل