لاگ ان / رجسٹر
بدھ 17 شوال 1443 بہ مطابق 18 مئی 2022
لاگ ان / رجسٹر
بدھ 17 شوال 1443 بہ مطابق 18 مئی 2022
لاگ ان / رجسٹر
بدھ 17 شوال 1443 بہ مطابق 18 مئی 2022
بدھ 17 شوال 1443 بہ مطابق 18 مئی 2022

 سوال یہ ہے کہ قرآن مجید کے لیے بنائے گئے ریک کو، جس میں کافی عرصے تک قرآن مجید رکھے رہے ہوں، جوتوں کے ریک کے طور پر استعمال کیا جاسکتا ہے؟ اگر ایسا کیا گیا ہو تو کیا حکم ہے؟

الجواب باسم ملهم الصواب

قرآن کریم کے لئے بنائے گئے ریک کو کسی ایسے استعمال میں لایا جا سکتا ہے جس میں بے ادبی نہ ہو مثلا اس میں کتابیں یا کوئی ضرورت کا سامان رکھ سکتے ہیں لیکن اس میں جوتے رکھنا ادب کے خلاف ہے اس لئے قرآن کریم کے ریک کو جوتے رکھنے کے لئے استعمال کرنے سے پرہیز کرنا چاہیے۔

محا لوحا يكتب فيه القرآن واستعمله في أمر الدنيا يجوز (البحر الرائق شرح كنز الدقائق، 1/ 213)

ويجوز رمي براية القلم الجديد، ولا ترمی براية المستعمل لاحترامه، كحشيش المسجد وكناسته لا يلقی في موضع يخل بالتعظيم، كذا في القنية. (الفتاوی الهندية، 5/ 324)

والله أعلم بالصواب

فتویٰ نمبر4476 :

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

لرننگ پورٹل