لاگ ان / رجسٹر
منگل 23 شوال 1443 بہ مطابق 24 مئی 2022
لاگ ان / رجسٹر
منگل 23 شوال 1443 بہ مطابق 24 مئی 2022
لاگ ان / رجسٹر
منگل 23 شوال 1443 بہ مطابق 24 مئی 2022
منگل 23 شوال 1443 بہ مطابق 24 مئی 2022

 ہم لوگ اپنے مرحومین کے ایصال ثواب کےلیے پورا سال قرآن پاک اور تسبیحات پڑھتے رہتے ہیں، سال کے خاص دن جسے برسی کہا جاتا ہے اس دن بھی ایصال ثواب کےلیے پڑھتے ہیں۔ لیکن ایک دوست کا کہنا ہے کہ پورا سال پڑھنا جائز ہےمگر برسی والے دن پڑھنا بدعت ہے۔ اس حوالے سے رہنمائی فرمائیں کیا ان کی بات درست ہے؟

الجواب باسم ملهم الصواب

اپنے مرحومین کے ایصال ثواب کے لیے سال کے کسی بھی دن قرآن مجید یا تسبیح پڑھنا بالعموم جائز ہے، خواہ وہ دن برسی کا ہو یا نہ ہو۔ البتہ سال کے تمام ایام میں کوئی خاص مثلاً برسی وغیرہ کے دن کو مختص کرکے اہتمام کے ساتھ لوگوں کو ایصال ثواب کے لیے دعوت دینا بدعت ہے، کیونکہ ایصال ثواب کے لیے مخصوص دن کی تعیین شریعت میں ثابت نہیں۔

چنانچہ صورت مسئولہ میں جس طرح پورے سال ایصال ثواب کیا جاتا ہے اسی طرح برسی والے دن بھی ایصال ثواب کرنا درست ہے بشرطیکہ اس دن خصوصیت کے ساتھ کوئی عمل نہ کیا جائے، بلکہ عام دنوں کی طرح کیا جائے۔ اگر اس دن خصوصیت کے ساتھ کوئی عمل کیا جائے تو وہ بدعت ہوجائے گا۔ 

في مراقي الفلاح: فللإنسان أن يجعل ثواب عمله لغيره عند أهل السنة والجماعة صلاةً كان أو صوماً أو حجًّا صدقةً أو قراءةً للقرآن أو الأذكار أو غير ذلك من أنواع البر، و يصل ذلك إلی الميت وينفعه. (كتاب الجنائز، فضل في زيارة القبور، ص: 261، 262)

قال العلامة المناوي رحمه الله تحت حديث: من أحدث في إمرنا هذا … أي أنشأ واخترع وأتی بأمر حديث من قبل نفسه…(ما ليس منه): أي رأياً ليس له في الكتاب والسنةعاضد ظاهر أو خفي، ملفوظ أو مستنبط (فهو رد): أي مردود علی فاعله لبطلانه. (فيض القدير شرح الجامع الصغير، 11\ 5594، مكتبة نزار مصطفی الباز رياض)

والله أعلم بالصواب

فتویٰ نمبر4515 :

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

لرننگ پورٹل