لاگ ان / رجسٹر
منگل 23 شوال 1443 بہ مطابق 24 مئی 2022
لاگ ان / رجسٹر
منگل 23 شوال 1443 بہ مطابق 24 مئی 2022
لاگ ان / رجسٹر
منگل 23 شوال 1443 بہ مطابق 24 مئی 2022
منگل 23 شوال 1443 بہ مطابق 24 مئی 2022

سوال:روزےکی حالت میں کووڈ کاٹیسٹ کرواناصحیح ہےیانہیں؟ٹیسٹ کرنےکاطریقہ TCR ٹیسٹ کاہے،جس میں ناک یاحلق کے اندرپائپ ڈال کرحلق کےاندرسےرطوبت لی جاتی ہےاورپھرٹیسٹ کیاجاتاہے۔سوال یہ ہےکہ کیاTCR ٹیسٹ کےذریعےروزہ ٹوٹ جاتاہےیانہیں؟اس مسئلےکاجواب عنایت فرمائیں۔ جزاك اللہ خیراً۔

الجواب باسم ملهم الصواب

کروناوائرس ٹیسٹ میں ناک کےاندرونی حصے کی رطوبت اور حلق کےاردگردلگی ہوئی رطوبت لینےکےلیےناک یاحلق میں جو پلاسٹک کی اِسٹک ڈالی جاتی ہے،اس میں یااس کےایک کنارےپرلگی ہوئی روئی میں کسی طرح کا کوئی کیمیکل  وغیرہ شامل ہو تو اس سے روزہ ٹوٹ جائےگا،اگر اس میں کسی بھی قسم کی دوائی شامل نہ ہو صرف خشک نلکی ہو ایک بار ڈال کر اندر  گھماکرواپس نکال لی جاتی ہو ۔یعنی ناک یا حلق کی رطوبت لینےمیں پیٹ یا دماغ میں کوئی دوایاکیمیکل نہیں جاتا۔تو ایسی صورت میں روزے کی حالت میں کرونا وائرس ٹیسٹ کے لیے ناک یاحلق کی رطوبت دیناجائزہے،اس سےروزے پر کوئی فرق نہیں پڑےگا،تاہم بہتریہ ہےکہ رات کے وقت ٹیسٹ کروایا جائے۔

لأن فساد الصوم متعلق بالدخول شرعا، قال النبي صلی الله عليه وسلم: «الفطر مما يدخل، والوضوء مما يخرج» علق كل جنس الفطر بكل ما يدخل، ولو حصل لا بالدخول لم يكن كل جنس الفطر معلقا بكل ما يدخل لأن الفطر الذي يحصل بما يخرج لا يكون ذلك الفطر حاصلا بما يدخل (بدائع الصنائع،۲/۹۲)

وكذا لو ابتلع خشبة أو خيطا ولو فيه لقمة مربوطة إلا أن ينفصل منها شيء. ومفاده أن استقرار الداخل في الجوف شرط للفساد بدائع (الدر المختار،۲/۳۹۶)

(قوله: وكذا لو ابتلع خشبة) أي عودا من خشب إن غاب في حلقه أفطر وإلا فلا (قوله: مفاده) أي مفاد ما ذكر متنا وشرحا وهو أن ما دخل في الجوف إن غاب فيه فسد وهو المراد بالاستقرار وإن لم يغب بل بقي طرف منه في الخارج أو كان متصلا بشيء خارج لا يفسد لعدم استقراره. (رد المحتار،۲/۳۹۷)

والله أعلم بالصواب

فتویٰ نمبر4897 :

لرننگ پورٹل