لاگ ان
جمعہ 11 ربیع الاول 1444 بہ مطابق 07 اکتوبر 2022
لاگ ان
جمعہ 11 ربیع الاول 1444 بہ مطابق 07 اکتوبر 2022
لاگ ان / رجسٹر
جمعہ 11 ربیع الاول 1444 بہ مطابق 07 اکتوبر 2022
جمعہ 11 ربیع الاول 1444 بہ مطابق 07 اکتوبر 2022

درج ذیل روایت بہت مشہور ہے، اس کے بارے میں بتائیے کیا یہ روایت صحیح ہے؟ 

 حضور ﷺ نے حضرت علی رضی اللہ عنہ سے فرمایا: اے علی رات کو روزانہ پانچ کام کر کے سویا کرو: 

۱۔چار ہزار دینار صدقہ دے کر سویا کرو۔

۲۔ایک قرآن شریف پڑھ کر سویا کرو۔

۳۔جنت کی قیمت دے کر سویا کرو۔

۴۔دو لڑنے والوں میں صلح کراکر سویا کرو۔

۵۔ایک حج کر کے سویا کرو۔

حضرت علی رضی اللہ عنہ نے عرض کیا یا رسول اللہ! یہ کام کیسے ممکن ہے؟حضور ﷺ نے ارشاد فرمایا کہ چار مرتبہ سورہ فاتحہ پڑھنے کا ثواب چار ہزار دینار صدقہ دینے کے برابر ہے۔ تین مرتبہ سورہ اخلاص پڑھنے کا ثواب ایک بار قرآن شریف پڑھنے کے برابر ہے۔ دس مرتبہ درود شریف پڑھنے سے جنت کی قیمت ادا ہوگی۔ دس مرتبہ استغفار پڑھنے کا ثواب دو لڑنے والوں میں صلح کرانے کے برابر ہے۔ چار مرتبہ تیسرا کلمہ پڑھنے سے ایک حج کا ثواب ملے گا۔ اس پر حضرت علی رضی اللہ عنہ نے فرمایا کہ یا رسول اللہ ! اب میں روز یہی عملیات کر کے سویا کروں گا۔

الجواب باسم ملهم الصواب

یہ روایت بالکل بے اصل ہے۔ اس لیے اسے بیان کرنا درست نہیں۔ البته مذکورہ سورتوں، درود شریف اور استغفار کے فضائل بہت سی صحیح احادیث میں وارد ہوئے ہیں۔ مثلا: سورہ فاتحہ کے بارے میں آیا ہے کہ ایک بار رسول اللہ ﷺ نے حضرت ابی بن کعب رضی اللہ عنہ سے فرمایا: تُحِبُّ أَنْ أُعَلِّمَكَ سُورَةً لَمْ يَنْزِلْ فِي التَّوْرَاةِ وَلاَ فِي الإِنْجِيلِ وَلاَ فِي الزَّبُورِ وَلاَ فِي الفُرْقَانِ مِثْلُهَا؟ قَالَ: نَعَمْ يَا رَسُولَ اللهِ، قَالَ رَسُولُ اللهِ صَلَّی اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ: كَيْفَ تَقْرَأُ فِي الصَّلاَةِ؟ قَالَ: فَقَرَأَ أُمَّ القُرْآنِ، فَقَالَ رَسُولُ اللهِ صَلَّی اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ: وَالَّذِي نَفْسِي بِيَدِهِ مَا أُنْزِلَتْ فِي التَّوْرَاةِ وَلاَ فِي الْإِنْجِيلِ وَلاَ فِي الزَّبُورِ وَلاَ فِي الفُرْقَانِ مِثْلُهَا، وَإِنَّهَا سَبْعٌ مِنَ الْمَثَانِي وَالقُرْآنُ الْعَظِيمُ الَّذِي أُعْطِيتُهُ. (سنن الترمذی، ابواب فضائل القرآن، باب ما جاء في فضل فاتحة الكتاب) ترجمہ:’’ کیا تمھیں پسند  ہے کہ میں تمھیں قرآن کی ایک ایسی سورت سکھاؤں جس کی مثل قرآن، انجیل اور زبور میں بھی کوئی سورت نازل نہیں کی گئی؟ میں نے عرض کیا کہ جی ہاں اللہ کے رسول! اس پر رسول اللہ ﷺ نے فرمایا کہ آپ نماز میں قراءت کیسے کرتے ہو؟   اس کے بعد رسول اللہ ﷺ نے سورۃ الفاتحہ کی تلاوت فرمائی اور فرمایا کہ قسم ہے اس ذات کی جس کے قبضے میں میری جان ہے اللہ تعالیٰ نے توراۃ، انجیل اور زبور اور نہ ہی فرقان میں اس جیسی کوئی اور سورت نازل فرمائی ہے، وہ سورت سات آیتوں والی بار بار پڑھی جانے والی ہے  اور قرآن عظیم ہے جو مجھے عطا کیا گیا ہے۔

اور قل ہو اللہ احد کے بارے میں فرمایا: "وَالَّذِي نَفْسِي بِيَدِهِ إِنَّهَا لَتَعْدِلُ ثُلُثَ الْقُرْآنِ". (السنن الكبری للبيهقي، کتاب الصلاة، جماع أبواب صلاة التطوع، وقيام شهر رمضان) ترجمہ:’’ اس ذات کی قسم جس کے قبضہ قدرت میں میری جان ہے یہ سورت ایک تہائی قرآن کے برابر ہے‘‘۔

مزید فضائل کتب حدیث میں بکثرت موجود ہیں، وہاں رجوع کر لیا جائے۔

والله أعلم بالصواب

فتویٰ نمبر4218 :

لرننگ پورٹل