لاگ ان / رجسٹر
پیر 22 شوال 1443 بہ مطابق 23 مئی 2022
لاگ ان / رجسٹر
پیر 22 شوال 1443 بہ مطابق 23 مئی 2022
لاگ ان / رجسٹر
پیر 22 شوال 1443 بہ مطابق 23 مئی 2022
پیر 22 شوال 1443 بہ مطابق 23 مئی 2022

اہل سنت والجماعت کے عقائد کون کون سے ہیں؟

الجواب باسم ملهم الصواب

سنن أبی داود اور ترمذی میں حضرت ابو ہریرہ رضی اللہ عنہ سے مروی ہے کہ رسول اللہ ﷺ نے فرمایا:«إِنَّ بني إسرائيل تَفَرَّقَتْ عَلَی ثِنْتَيْنِ وَسَبْعِينَ مِلَّةً، وَتَفْتَرِقُ أُمَّتِي عَلَی ثَلَاثٍ وَسَبْعِينَ مِلَّةً، كُلُّهُمْ فِي النَّارِ إِلَّا مِلَّةً وَاحِدَةً»، قَالُوا: وَمَنْ هِيَ يَا رَسُولَ اللَّهِ؟ قَالَ: «مَا أَنَا عَلَيْهِ وَأَصْحَابِي». (سنن الترمذي، ابواب الايمان، ما جاء في افتراق هذه الأمة) ترجمہ:’’بنی اسرائیل بہتّر فرقوں میں بٹ گئےتھے، اور میری امت تہتر فرقوں میں بٹے گی سب کے سب جہنم میں ہوں گے سوائے ایک کے، صحابہ کرام رضی اللہ عنہم نے استفسار فرمایا کہ اے اللہ کے رسول! وہ نجات پانے والا فرقہ کون ہے؟ رسول اللہ ﷺ نے فرمایا کہ جس پر میں اور میرے صحابہ قائم ہیں‘‘۔

چنانچہ ہر وہ مسلمان جو متبع سنت ہو اہل السنۃ والجماعۃ میں داخل ہے۔ البتہ اہل سنت والجماعت کے عقائد کی کچھ تفصیل تکملۂ ’’البحرالرائق ‘‘میں حضرت عبد اللہ بن عمر رضی اللہ عنہما کی ایک روایت میں مذکور ہے کہ جس شخص میں یہ دس علامتیں ہوں وہ اہل سنت والجماعت میں سے ہوگا ، یعنی پانچ وقت کی نمازیں باجماعت پڑھتاہو، صحابہ رضی اللہ عنہم میں سے کسی کاذکر برائی کے ساتھ نہ کرے نہ کسی میں عیب نکالے، اور مسلمان بادشاہ کے خلاف تلوار نہ اٹھائے (یعنی جنگ نہ کرے)،اور اپنے ایمان میں شک نہ کرے کہ میں مسلمان ہوں یا نہیں بلکہ خود کو پورے وثوق سے مؤمن اور مسلم کہے، اس بات پر ایمان رکھتا ہو کہ ہر اچھی بری تقدیر اللہ تعالیٰ کی طرف سےپیش آتی ہے، خدا کے دین میں کج بحثی نہ کرے، کسی گناہ کی بناپرکسی مسلمان کو کافر قرار نہ دے، اور اہل قبلہ میں سے جو انتقال ہو اس کی نماز جنازہ نہ چھوڑتاہو، سفر وحضر میں موزوں پر مسح کرنے کا قائل ہو، اور ہر نیک اور گنہگار کے پیچھے نماز کو جائز سمجھتاہو ۔

والله أعلم بالصواب

فتویٰ نمبر4234 :

لرننگ پورٹل