لاگ ان / رجسٹر
پیر 15 شوال 1443 بہ مطابق 16 مئی 2022
لاگ ان / رجسٹر
پیر 15 شوال 1443 بہ مطابق 16 مئی 2022
لاگ ان / رجسٹر
پیر 15 شوال 1443 بہ مطابق 16 مئی 2022
پیر 15 شوال 1443 بہ مطابق 16 مئی 2022

 تیمم کا مکمل طریقہ بیان فرمادیں، نیز تیمم کن کن چیزوں سے کرسکتے ہیں؟ سفر میں ہوں، ہسپتال یا مارکیٹ میں ہوں تو اپنے پاس کیا رکھیں، تفصیل سے بتادیں۔ اگر نماز کا وقت صرف اتنا ہوکہ تیمم کرکے نماز پڑھی جاسکتی ہو کیا حکم ہے؟

الجواب باسم ملهم الصواب

تیمم کا طریقہ یہ  ہے کہ پاکی حاصل کرنے کی نیت سے پاک مٹی یا پتھر پر ہاتھ ماریں اور اس  سے چہرے کا اس طرح مسح کریں کہ جتنے حصے پر وضو میں پانی پہنچانا ضروری ہے چہرے کے اس پورے حصےپر ہاتھ پھیریں،  اس کے بعد دوبارہ پاک مٹی یا پتھر پر ہاتھ ماریں اور اس سے دونوں ہاتھوں کا کہنہوں سمیت مسح کریں چہرے اور ہاتھوں کا مسح کرتے ہوئے اس بات کا خیال رکھیں کہ بال کے برابر بھی جگہ مسح سے خالی نہ رہ جائے۔

تیمم مٹی اور مٹی کی جنس کی تمام چیزوں مثلا پتھر ریت ماربل چونا وغیرہ سے کیا جا سکتا ہے ۔ 

نیز تیمم اس وقت صحیح ہوتا ہے جب آدمی جہاں ہے وہاں سے ایک میل تک پانی ملنے کی امید نہ ہو،  یا کسی عذر کی وجہ سے پانی کے استعمال پر قدرت نہ ہو، یا پانی کے استعمال سے بیمار ہو جانے یا بیماری کے بڑھ جانے کا اندیشہ ہو۔   ان اعذار کے علاوہ عام حالات میں  تیمم کرنے کی اجازت نہیں  لہذا اسپتال میں یا مارکیٹ میں یا جہاں بھی ہوں اور مذکورہ اعذار میں سے کوئی عذر نہ پایا جاتا ہو تو تیمم جائز نہیں ، اسی طرح نماز کے وقت کی تنگی میں بھی تیمم جائز نہیں بلکہ وضو کر کے نماز پڑھنا لازم ہے اگر وضو کرتے ہوئے نماز کا وقت نکل جائے توتب بھی وضو کرکے  نماز کی قضاء پڑھی جائے گی۔

وشرعا (قصد صعيد) شرط القصد لانه النية (مطهر) خرج الارض المتنجسة إذا جفت فإنها كالماء المستعمل (واستعماله) حقيقة أو حكما ليعم التيمم بالحجر الاملس (بصفة مخصوصة) هذا يفيد أن الضربتين ركن،(من عجز) مبتدأ خبره تيمم (عن استعمال الماء) المطلق الكافي لطهارته لصلاة تفوت إلی خلف (البعده) ولو مقيما في المصر (ميلا) أربعة الاف ذراع، وهو أربع وعشرون أصبعا، وهي ست شعيرات ظهر لبطن وهي ست شعرات بغل (أو لمرض) يشتد أو يمتد بغلبة ظن أو قول حاذق مسلم ولو بتحرك . (الدر المختار شرح تنوير الأبصار وجامع البحار (ص: 36)

والله أعلم بالصواب

فتویٰ نمبر4415 :

لرننگ پورٹل