لاگ ان
جمعہ 15 جمادی الاول 1444 بہ مطابق 09 دسمبر 2022
لاگ ان
جمعہ 15 جمادی الاول 1444 بہ مطابق 09 دسمبر 2022
لاگ ان / رجسٹر
جمعہ 15 جمادی الاول 1444 بہ مطابق 09 دسمبر 2022
جمعہ 15 جمادی الاول 1444 بہ مطابق 09 دسمبر 2022

 زید اور فاطمہ میاں بیوی تھے، زید نے فاطمہ کو طلاق دے دی۔ طلاق کے بعد زید نے حلیمہ سے نکاح کر لیا جبکہ فاطمہ کا نکاح بکر سے ہوگیا۔ اب سوال یہ ہے کہ زید کی جو اولاد حلیمہ سے ہے اس کا نکاح فاطمہ کی اس اولاد سے جو بکر سے ہے ہوسکتا ہے یا نہیں؟

الجواب باسم ملهم الصواب

صورت مسئولہ میں زید کی جواولاد حلیمہ کے بطن سے ہے اس کا نکاح فاطمہ کی اس اولادکے ساتھ جو بکر کے نطفے سے ہے ہو سکتا ہے کیونکہ ان کے درمیان حرمت کا کوئی رشتہ قائم نہیں۔

منكوحة أبيه إذا ولدت ابنا ولها بنت من زوج آخر؛ فهي أخت أخيه لأبيه فيجوز له أن يتزوجها(بدائع الصنائع في ترتيب الشرائع، 4/ 5)

والله أعلم بالصواب

فتویٰ نمبر4483 :

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔


لرننگ پورٹل