لاگ ان / رجسٹر
پیر 22 شوال 1443 بہ مطابق 23 مئی 2022
لاگ ان / رجسٹر
پیر 22 شوال 1443 بہ مطابق 23 مئی 2022
لاگ ان / رجسٹر
پیر 22 شوال 1443 بہ مطابق 23 مئی 2022
پیر 22 شوال 1443 بہ مطابق 23 مئی 2022

مفتیان کرام کی خدمت میں میرا سوال یہ ہے کہ ایک مولانا صاحب نے اپنے بیان میں یہ فرمایا کہ حدیث میں آتا ہے: جب تہجد کا وقت ہوتا ہے تو اللہ تعالی فرشتوں سے فرماتا ہے کہ جو میرے نیک بندے ہیں انہیں اٹھا دو اور جو میرے گناہ گار بندے ہیں انہیں سلا دو۔ تو کیا یہ بات حدیث مبارکہ میں نقل ہوئی ہے؟

الجواب باسم ملهم الصواب

ایسی کوئی روایت ذخیرہ حدیث میں ہمیں  نہیں ملی۔ البتہ ایک روایت میں اللہ تعالی کا آسمانِ دنیا پر تشریف لاکر اعلانات فرمانے کا ذکر ہے۔ 

عَنْ أَبِي هُرَيْرَةَ ، رَضِيَ اللَّهُ عَنْهُ ، أَنَّ رَسُولَ اللهِ صلی الله عليه وسلم قَالَ : يَنْزِلُ رَبُّنَا تَبَارَكَ وَتَعَالَی كُلَّ لَيْلَةٍ إِلَی السَّمَاءِ الدُّنْيَا حِينَ يَبْقَی ثُلُثُ اللَّيْلِ الآخِرُ يَقُولُ: مَنْ يَدْعُونِي فَأَسْتَجِيبَ لَهُ مَنْ يَسْأَلُنِي فَأُعْطِيَهُ مَنْ يَسْتَغْفِرُنِي فَأَغْفِرَ لَهُ. (صحيح البخاري، كتاب التهجد، باب الدعاء والصلاة من آخر الليل) ترجمہ: حضرت ابوہریرہ رضی اللہ عنہ فرماتے ہیں کہ رسول اللہ ﷺ نے فرمایا: ہررات کے آخری تہائی حصے میں اللہ تعالی آسمان دنیا پر نزول فرماتے ہیں اور ارشاد فرماتے ہیں: کوئی ہے مجھ سے دعا کرنے والا کہ اس کی دعا قبول کروں؟  کوئی ہے مجھ سے سوال کرنے والا کہ اسے عطا کروں؟ کوئی ہے مجھ سے مغفرت طلب کرنے والا کہ اسے بخش دوں؟۔ 

والله أعلم بالصواب

فتویٰ نمبر2654 :

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

لرننگ پورٹل