لاگ ان / رجسٹر
پیر 22 شوال 1443 بہ مطابق 23 مئی 2022
لاگ ان / رجسٹر
پیر 22 شوال 1443 بہ مطابق 23 مئی 2022
لاگ ان / رجسٹر
پیر 22 شوال 1443 بہ مطابق 23 مئی 2022
پیر 22 شوال 1443 بہ مطابق 23 مئی 2022

میں نے دو سال پہلے عید الاضحی کے جانوروں کا کاروبار شروع کیا تھا، جو تا حال جاری ہے۔ اس کاروبار کےلیے میں نے اپنے ماموں سے انویسٹمنٹ لی تھی، ماموں شراکت دار نہیں ہیں، بس بطور قرض انہوں نے دےدیا تھا۔ لیکن اب وہ واپس نہیں لے رہے، ان کا کہنا ہے کہ جب ضرورت ہوگی تو میں لے لوں گا۔ ساتھ ساتھ میری ایک جاب بھی چل رہی ہےاور میں قرض واپس کرنے کے قابل بھی ہوں۔ سوال یہ ہے کہ مجھ پر زکوۃ لازم ہوگی یا نہیں؟ 

الجواب باسم ملهم الصواب

واضح رہے کہ اگرکسی کے پاس ساڑھے سات تولہ سونایا ساڑھے باون تولہ چاندی یا اس کی مالیت کے برابرنقدی یا مال ِتجارت یاان سب کا مجموعہ ساڑھے باون تولہ چاندی کی مالیت کے برابرہو تو وہ شخص صاحبِ نصاب ہے، سال گزرجانے کے بعد اس مال میں سے قرض کی رقم منہا کرنے کے بعد بقیہ مال نصاب کے برابر ہو تو اس کے ذمے زکوٰۃ کی ادائیگی واجب ہے۔ اور اگر قرض کی رقم منہا کرنے کے بعد بقیہ مال نصاب کے برابر نہ ہو تو زکوٰۃ لازم نہیں ہوتی۔ لہذا صورت مسئولہ میں واجب الادا قرض منہا کرنے کےبعد اگر بقیہ مال نصاب کے بقدر ہے تو آپ پر زکوٰہ ادا کرنا لازم ہے، ورنہ نہیں۔

(نصاب الذهب عشرون مثقالا والفضۃ مائتا درهم کل عشرۃ) دراهم ( وزن سبعۃ مثاقیل…( واللازم )…(أو) في (عرض تجارۃ قیمتہ نصاب)… (من ذهب أو ورق)… (مقوما بأحدهما) إن استویا فلو أحدہما أروج تعین التقویم بہ ولو بلغ بأحدهما نصابا دون الآخر تعین ما یبلغ بہ ولو بلغ بأحدهما نصابا وخمسا وبالآخر أقل قومہ بالأنفع للفقیر… (ربع عشر) خبر قولہ اللازم (وفي کل خمس) بضم الخاء (بحسابہ) ففي کل أربعین درهما درهم وفي کل أربعۃ مثاقیل قیراطان وما بین الخمس إلی الخمس عفو وقالا ما زاد بحسابہ. (الدر المختار: 295/2 ط: دار الفکر البیروت)

(ومن کان علیہ دین یحیط بمالہ فلا زکاۃ علیہ) وقال الشافعي: تجب لتحقق السبب وهو ملک نصاب تام. ولنا أنہ مشغول بحاجتہ الأصلیۃ فاعتبر معدوما کالماء المستحق بالعطش وثیاب البذلۃ والمهنۃ (وإن کان مالہ أکثر من دینہ زکی الفاضل إذا بلغ نصابا) لفراغہ عن الحاجۃ الأصلیۃ. (فتح القدیر للکمال ابن الهمام، 2/ 160، ط: دار الفکر)

والله أعلم بالصواب

فتویٰ نمبر4552 :

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

لرننگ پورٹل